HomePoetryانا پرست قبیلہ اداس ہو گیا ہے۔۔۔


انا پرست قبیلہ اداس ہو گیا ہے۔۔۔

ہوا کا جبر بجھانے چراغ کو گیا ہے
انا پرست قبیلہ اداس ہو گیا ہے

میں جس کے واسطے بینائیاں خریدتا تھا
وہ میری روح میں تاریکیاں چبھو گیا ہے

لہو اور اشک ملا کر لکھیں گے خط اس کو
اگر دوات کا محلول ختم ہو گیا ہے

زمینِ  دل کا تقدس تباہ کرتے ہوئے
وہ کون ہے جو تعصب کا بیج بو گیا ہے

اس ایک پل کی لحد سے شفق ابھرتی ہے
سحر کے گال جو اپنے لہو سے دھو گیا ہے

مفاہمت کی دل آویز خواب گاہوں میں
بہ طرزِ عیش ہمارا ضمیر سو گیا ہے

ہر اک لکیر بھٹکنے لگی اندھیرے میں
یہ کون دن کی ہتھیلی میں شب پرو گیا ہے

مرے “دیے” سے تقاضا ہے اور کیا عباس
سرائے شام سے تا کوئے صبح تو گیا ہے 

کلام :حیدر عباس

RELATED ARTICLES
- Advertisment -