HomePoetryخواب حقیقت آج ہوئے۔۔۔


لو تاج محل تعمیر ہوا
لو خواب حقیقت آج ہوئے
کچھ فر حتؔ بن کرساتھ رہے
کچھ درد میں ڈھلتے رہتے تھے
کچھ بند آ نکھو ں سے لپٹے تھے
جو سپنے میں نے دیکھے تھے
جو خواب تمہیں بتلائے تھے
جو تم نے خواب دکھائے تھے
وہ خواب حقیقت آج ہوئے
وہ میری تنہا راتو ں میں 
جینے کا سہارا بنتے تھے
وہ مجھ سے باتیں کرتے تھے 
اور میری باتیں سنتے تھے
جومیرے آنسو چنتے تھے
جو میرے مسیحا بن بن کر 
اِ ن ز خمو ں کو سہلا تے تھے
جومیرا دل بہلا تے تھے
وہ خواب حقیقت آج ہوئے
الہام وہ میرے سچے ہیں
وہ سپنے پورے آج ہو ئے
لو شہر کوئی تسخیر ہوا 
اک افسانہ تحریر ہوا
لو تاج محل تعمیر ہوا
مقبول ہو ئی لو آج دعا
لو آج سویرا ہو بھی گیا
اب غم کا اندھیرا دور ہوا
وہ زہر جو میں نے چکھا تھا 
اب امرت میں تبدیل ہوا
تم اپنی تنہا راتوں میں 
یہ با بِ محبت پڑھ لینا
یہ تحفۂ الفت رکھ لینا

کلام :فرزانہ فرحت (لندن)

RELATED ARTICLES
- Advertisment -